Home / اسلام / قربانی

قربانی

از قلم
سعدیہ ہما شیخ

عید قرباں سے پہلے پچھلے چند سال سے ایک نئا ٹرئنڈ مسلمانوں کو ان کی سنت سے دور کرنے کے لیے اسلام کے دشمنوں نے انسانیت کے نام پر نکالا ہے اور اس سازش کے جال میں بہت سے معصوم پھنس کر اپنے دینی فریضے سے دور یو رہے ہیں قربانی سے پہلے یہ پراپیگنڈہ غریب کے نام پر شروع کر دیا جاتا ہے قربانی کے پیسوں سے غریب کی بیٹی کو جہیز دے د و بیمار کو دوای لے دو اور قربانی کی بجاے کسی غریب کے گھر راشن ڈال دو تو اس سے قربانی سے دگنا ثواب ملے گا یاد رکھیں کہ قربانی ہر صاحب حثیت پر فرض ہے اس کا بدل کو ی نہیں آپ ص نے فرمایا!جو آسودہ حال ہونے کے باوجود قربانی نہ کرے وہ ہماری عید گاہ کے قریب نہ آے

قربانی کی اہمیت سے آگہی ضروری ہے قربانی حضرت ابراھیم کی سنت ہے آ پ ص نے فرمایا یہ تمہارے باپ ابراھیم کی سنت ہے خود اللہ تعالی نے نبی پاک ص کو سورہ کوثر میں قربانی کا حکم دیا “پھر اپنے رب کے لئے نماز پڑھو اور قربانی کرو
قربانی کی اہمیت آپ ص کی اس حدیث سے واضح ہو جاتی ہے آپ ص نے فرمایا “بےشک اس دن ہم یہلا کام یہ کرتے ہیں کہ نماز عید ادا کرتے ہیں پھر واپس پلٹتے ہیں اور قربانی کرتے ہیں جس شخص نے ایسے ہی کیا اس نے ہماری سنت کو پا لیا اسی طرح حجتہ الوداع کے موقع پر آ پ ص نے اپنی طرف سے ایک بکری اور ازدواج کی طرف سے ایک گاے کو ذبح فرمایا_
عرفات میں آپ ص نے فرمایا”اے لوگو!ہر سال ہر گھر والوں پر قربانی آتی ہے
اس لیے یہ واویلا کہ قربانی کے پیسوں سے غریب کی امداد کر دو راشن لے دو شادی کروا دو کا دوا لے دو اس کو کسی طرح بھی جسٹئفای نہیں کیا جا سکتااماں عائشہ سے راوی ہے کہ اللہ کے رسول ص نے فرمایا”کسی آدمی نے قربانی کے روز کوی ایسا عمل نہیں کیا جو اللہ تعالی کو قربانی سے زیادہ پسند ہو قربانی قیامت کے دن اپنے سینگھوں بالوں اور کھروں سمیت آے گی کہ خون زمین پر گرنے سے پہلے اللہ تعالی کے ہاں ایک عالی مقام پر گرتا ہے لہذا اسے بہا کر دلوں کی تسلی کر لو
پھر یہ مسلہ اٹھا دیتے ہیں کہ قربانی واجب نہیں سنت یے
حضرت عبداللہ بن عمر سے کسی نے پوچھا کیا قربانی واجب یے تو آ نے فرمایا
نبی ص نے قربانی کی اور مسلمان قربانی کرتے رہے سوال کرنے والے کی اس جواب سے تشفی نہ ہوی اس نے سوال دہرایا اور دوبارہ وہی جواب ملا امام ترمژی کا قول ہےط”اہل علم کے نزدیک اسی ہر عمل ہے کہ قربانی واجب نہیں مگرطئہ نبی کی سنتوں میں سے ہے اس پر عمل کرنا مستحب ہے
ایک اور بحث کیا قربانی سنت موکدہ ہے
محدثین اس کے سنت موکدہ ہونے کے قائل ہیں
عید الاضحی کی نماز کے بعد ہر استطاعت رکھنے والے پر قربانی کرنا سنت موکدہ ہے
اگر کوی شخص قربانی کی نذر مان لے تو اس پر واجب ہو جاے گی
قربانی کا مقصد اللہ کا قرب اور اس کی رضا حاصل کرنا ہے اور اس کے لیے ضروری ہے کہ پاک مال سے اور نبی کی سنت کے مطابق ہو دکھاوہ اور نمائش کا عنصر نہ ہو
قربانی حضرت ابراھیم کی سنت ہے اپ نے خواب میں دیکھا کہ آپ اپنے بیٹے حضرت اسماعیل کو ذبح کر رہے ہیں جب آپ نے تذکرہ بیٹے سے کیا تو بیٹے نے رہتی دنیا تک فرمانبرداری کی مثال قایم کر دی اور کہا آ پ کو جو حکم دیا جارہا ہے کر دیجیے انشاء الله مجھے صبر کرنے والوں میں پایں گئے
اس کا زکر سورہ الصفات میں رب کرئم نے یوں کیا
پھر جب دونوں مطیع ہو گئے اور ابراھیم نے اسے پیشانی کے بل گرا دیا اور ہم نے اسے ندا دی کہ اے ابراھیم !تو نے خواب سچ کر دکھایا یقئنن ہم نیکی کرنے والے کو ایسا ہی بدلہ د ئتے ہیں
یہ قربانی محض خون اور گوشت کی قربانی نہ تھی بلکہ دل اور روح کی محبت کی پیار کی بے نظیر مثال ہے بیٹے کی فرمانبرداری اور باپ کی رب کی محبت اور اطاعت اپنی اکلوتی اولاد اور عزیز ترین متاع رب کے حضور ئش کر دی اپنے ہر ارادے محبت اور ہر جزبے کو مٹا کر صرف رب کی رضا پر گردن جھکا دی اور یہی اسلام کی حقیقی روح ہے اسلام کا دوسرا نام قربانی ہی یےانے آپ کو اور انی مرضی اپنےبیر جذبے کو اللہ تعالی کے سپرد کر دینا اور کے لئے گردن جھکا دینا قربانی ہی قرب کا زریعہ بنتی ہے اسی سے انسان سبق سیکھتا ہے کہ اللہ کی خاطر کیسے انا سب کچھ قربان کرنا ہے اپنی جان اپنی اولاد اپنا مال اپنی قوتیں اپنی صلاحتیں اپنا وقت اپنے جزبات
سب کچھ رب کی عای میں قربان کرنا ہے یہی حقیقت ہے اور یہی اس ایثار ہے جس کی برکت سے مسلمان دن میں انچ مرتبہ نماش پڑھتے ہیں
اے اللہ تو محمد ص اور اس کی آل پر برکت نازل کر،جس طرح تو نے ابراہیم ع اور اسک آل پر برکت نازل کی..

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے