Home / اسلام / قُرآن اور ذکرِ ابراھیم خلیل !! 🌹 { 1 } 🌹

قُرآن اور ذکرِ ابراھیم خلیل !! 🌹 { 1 } 🌹

🌹#العلمAlilm🌹 علمُ الکتاب 🌹
(( اَلاَنعام ، اٰیت 74 ، 75 )) 🌹
قُرآن اور ذکرِ ابراھیم خلیل !! 🌹 { 1 } 🌹 ازقلم 🌺🌺🌺اخترکاشمیری
🌹 علمُ الکتاب اُردو زبان کی پہلی تفسیر آن لاٸن ھے جس سے روزانہ 75 ہزار سے زیادہ اَفراد اِستفادہ کرتے ہیں !! 🌹🌹🌹
🌹 براۓ مہربانی ھمارے تمام دوست اپنے تمام دوستوں کے ساتھ قُرآن کا یہ پیغام شیٸر کریں !! 🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹
🌹 اٰیات و مفہومِ اٰیات ! 🌹
🌹 واذ
قال ابراھیم
لابیہ اٰزر اتتخذ
اصناما اٰلھة انی ارٰک
وقومک فی ضلال مبین 74
وکذٰلک نری ابرٰھیم ملکوت السمٰوٰت
والارض ولیکون من الموقنین 75
تاریخِ عالَم کے یادگار واقعات میں سے ایک یادگار واقعہ وہ ھے جب ابراھیم نے اٰزر سے پُوچھا تھا کہ کیا تُم بھی اپنے دَست ساختہ بتوں کو اپنا اِلٰہ مانتے ھو ? اگر یہ سَچ ھے تو پھر میں تُم کو اور تُمہاری قوم کو ایک واضح گُم راہی میں مُبتلا دیکھتا ھوں ، ابراھیم کے اِس واضح سوال اور واضح جواب کا واضح سبب یہ تھا کہ ھم نے ابراھیم کو اپنی زمینی و آسمانی موجُودات اور اپنے نظمِ موجُودات کے کُچھ کرشمات دکھا کر اُس کو اپنے صاحبِ ایمان و یقین بندوں میں سے ایک صاحبِ ایمان و یقین بندہ بنا دیا تھا !
🌹 تَمھیدِ کلام ! 🌹
قُرآن کے وضع کیۓ ھوۓ ہر ایک اُصولِ ایمان اور قُرآن کی پیش کی ھوٸ ہر ایک دلیل و بُرہان سے یہ ایک ثابت ھے کہ قُرآن اپنی لَفظی بلاغت اور معنوی صداقت کے لیۓ کسی خارجی دلیل کا مُحتاج نہیں ھے کیونکہ اِس کی ہر دلیل اِس کی اٰیات میں اِس طرح موجُود ھے کہ اللہ تعالٰی نے اِس کتاب کی جس اٰیت کے جس لَفظ کی توضیح و تشریح کی اَلگ سے کوٸ ضرورت محسوس کی ھے ، اُس اٰیت کے اُس لَفظ کی تشریح و توضیح کے لیۓ اللہ نے اپنے رسول کو اپنے ایک اَلگ قولِ ” قُل “ کے ذریعے اَلگ سے وضاحت کا حُکم دیا ھے اور اللہ کے رسول نے جس طرح قُرآن کی 6666 اٰیات اُمت کو پڑھ کر سُناٸ اور تَحریر کراٸ ہیں ، اسی طرح سے یہ تمام تشریحی اور توضیحی اَقوالِ ” قُل “ بھی اللہ کے رسول نے اُمت کو سُناۓ اور تَحریر کراۓ ہیں ، قُرآنِ کریم کی اٰیات میں اٰیات بَن کر آنے والے یہی ” قُل “ قُرآن کی مُقدس اَحادیث ہیں اور یہی ” قُل “ اللہ کے اور اُس کے رسول کی بھی مُقدس اَحادیث ہیں ، قُرآنِ کریم میں اللہ اور اُس کے رسول کی اَحادیثِ قُل کی کُل تعداد 332 ھے جن میں سے 44 قُل صرف سُورةُالاَنعام میں آۓ ہیں اور اِن 44 اَقوالِ قُل میں سے 27 واں قُل سُورة الاَنعام کی اٰیت 71 کا وہ آغازِ کلام ھے جس میں اللہ تعالٰی نے اپنے حُکمِ قُل کے ذریعے ” قل ھدی اللہ ھو الھدٰی وامرنا لنسلم لرب العٰلمین “ ارشاد فرمایا ھے ، جس کا حاصل یہ ھے کہ ” آپ اِن بِہکے اور بَہٹکے ھوۓ انسانوں کو یہ بات بتادیں کہ اللہ کی رَاہ ہی وہ سیدھی ، سَچی ، سُچی ، بے بَل اور بے بَدل راہ ھے جس پر اللہ نے ہمیں چلنے کا حُکم دیا ھے ، اِس آیت سے شروع ھونے اور بعد کی دو آیات کے بعد ختم والے اِس مضمون کے خاتمہِ کلام کے بعد مُحولہ بالا اٰیات سے سیدنا ابراھیم علیہ السلام کی حیاتِ طیبہ کا وہ آغاز ھوا ھے جس کی قُرآن میں جگہ جگہ پر حسین جَھلکیاں نظر آتی ہیں کیونکہ ابراھیم علیہ السلام اللہ کے وہ جلیل القدر نبی ہیں جن کا قُرآنِ کریم نے سُورةُالبقرة کی اٰیت 124 ، 125 ، 126 ، 127 ، 130 ، 132 ، 135 ، 136 ، 140 ، 228 ، 260 ، سُورہِ اٰلِ عمران کی اٰیت 65 ، 67 ، 68 ، 84 ، 95 ، 97 ، سُورةُالنسا ٕ کی اٰیت 54 ، 125 ، 163 ، سُورةُالاَنعام کی اٰیت 74 ، 75 ، 83 اور اٰیت 161 تک ، اَب تک کم و بیش 34 بار ذکر ھو چکا ھے اور سُورةُالنسا ٕ کی اٰیت 125 میں اللہ تعالی نے اپنے آخری رسول کو اپنی آخری وحیِ نازلہ میں اٰیت ” اتبع ملة ابراھیم “ کے ذریعے سیدنا ابراھیم علیہ السلام کی اتباع کا دیا ھے جس کا مطلب یہ ھے کہ سیدنا ابراھیم علیہ السلام دینِ قُرآن کے مَہام المدار ہیں ، محدثینِ عجم اور اُن کے تابعِ مُہمل مُفسرینِ عجم نے چونکہ اپنی باطل روایات کے ذریعے سیدنا ابراھیم علیہ السلام پر شرک اور کذب کے بُہتان باندھ کر قُرآن کے سارے دین کو مشکوک بنانے کی سازش کی ھے ، اِس لیۓ اِس کلمہِ تَمھید کے بعد آنے والی اٰیات کے ضمن میں آنے والے مضامین میں ھم اِس سازش کا ایک تفصیلی اور بَھرپُور جاٸزہ لیں گے !!

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے