Home / کالم / تفہیم مغرب فورم*

تفہیم مغرب فورم*

📖 *تصویر سازی کا فتنہ اور اہل علم کا رویہ*
✒️ *مولانا اعجاز مصطفی مدظلہ*
ـــــــــــــــــــ

آج ہمارے علمائے کرام اور دین دار طبقہ میں ایک گناہ بہت زیادہ کیا جا رہا ہے اور وہ ہے موبائل کے ذریعہ تصویریں بنانے کا شوق اور وہ بھی اللہ کے گھر میں، مساجد، مدارس اور دینی تقریبات میں *حد تو یہ ہے کہ اللہ تعالیٰ کے گھر کعبۃ اللہ کو پیٹھ کر کے لوگ تصویریں بنا رہے ہوتے ہیں، کیا اللہ تعالیٰ کو غصہ نہیں آئے گا؟ اللہ تعالی ان کو اپنے گھر سے دفع نہیں کرے گا؟ اللہ تعالیٰ کی طرف سے حکم نہیں آئے گا کہ جاؤ نا! تم اتنے نا پاک ہوگئے ہو کہ ہمارے گھر میں آنے کے قابل نہیں رہے اور دوسری طرف ہمارے دینی مدارس اور مساجد میں قرآنی تقریبات اور ختم بخاری کی تقریبات بڑے دھوم دھام، فخر ومباہات اور اسراف وتبذیر کے ساتھ ہو رہی ہیں جو بجائے کم ہونے کے اور زیادہ بڑھ رہی ہیں اور انہی دینی تقریبات اور روحانی محافل میں جو اللہ تعالیٰ کے گھر (مساجد) میں جہاں رحمت کے فرشتوں کا بسیرا ہوتا ہے، قرآن کریم اور احادیث موجود ہوتی ہیں، لیکن ہمارے علمائے کرام، طلبہ اور دین دار لوگوں کی دھڑا دھڑ موویاں بن رہی ہوتی ہیں، لائیو پروگرام نشر ہو رہے ہوتے ہیں، تصویریں اور فوٹو گرافی ہو رہی ہوتی ہے اور کوئی ان کو روکنے والا نہیں، اس منکر کے خلاف کوئی کھل کر مخالفت نہیں کرتا تو اب اللہ تعالیٰ کا غضب اور قہر نازل نہیں ہوگا تو کیا ہوگا؟* ہمارے علمائے کرام اور مفتیانِ عظام کو چاہئے کہ وہ بیٹھ کر متفقہ طور پر یہ بات طے کریں کہ *کم از کم دینی تقریبات، خصوصاً قرآن کریم، ختم بخاری کی تقریبات کو اس گناہِ بے لذت سے پاک رکھیں اور مساجد میں فوٹو اور تصویر کھینچنے اور مووی بنانے کو ناجائز، حرام اور گناہ قرار دیں تو امید ہے کہ اللہ تعالیٰ کی ناراضی کم ہوگی اور اس طرح کی وبائیں، امراض، آفات اور مصائب وآلام رک جائیں گے* اگر ہم نے اللہ تعالیٰ کے گھروں کا اکرام نہ کیا تو اللہ تعالیٰ اسی طرح اپنے گھروں سے ہمیں نکال دیں گے، و لافعل اللّٰہ ذٰلک قرآن میں اللہ تعالی کا ارشاد ہے: وَاتَّقُوْا فِتْنَۃً لَّا تُصِیْبَنَّ الَّذِیْنَ ظَلَمُوْا مِنْکُمْ خَآصَّۃً وَاعْلَمُوْا أَنَّ اللّٰہَ شَدِیْدُ الْعِقَاب (الانفال:۲۵)
حضرت مولانا محمد ادریس کاندہلوی رحمہ اللہ اس آیت کی تفسیر میں لکھتے ہیں: اور بچتے رہو اور ڈرتے رہو اس فتنہ سے کہ جس کا وبال تم میں سے فقط ان لوگوں پر نہ پڑے گا جنہوں نے خاص کر ظلم کا ارتکاب کیا ہے، بلکہ اس کا وبال عام ہوگا، ظالم اور غیر ظالم سب ہی اس کی زَد میں آجائیں گے، آیت میں *فتنہ سے مداہنت فی الدین کا فتنہ مراد ہے کہ جب لوگ کھلم کھلا منکرات کا ارتکاب کرنے لگیں اور اہلِ علم باوجود قدرت کے مداہنت برتیں اور نہ ہاتھ اور نہ زبان سے امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کریں اور نہ دل سے اس سے نفرت کریں جو آخری درجہ ہے اور نہ ایسے لوگوں سے میل جول کو چھوڑیں تو ایسی صورت میں اگر من جانب اللہ کوئی عذاب آیا تو وہ عام ہوگا، جس میں اہلِ معاصی اور مرتکبینِ منکرات کی کوئی تخصیص نہ ہوگی، بلکہ وہ عذاب مداہنت کرنے والوں پر بھی واقع ہوگا، کیونکہ منکرات اور معاصی اگر لوگوں میں شائع ہو جائیں تو ان کی تغییر حسبِ قدرت سب پر واجب ہے اور جو باوجود قدرت کے سکوت کرے تو معلوم ہوا کہ وہ بھی دل سے راضی ہے اور راضی حکم میں عامل کے ہے، بلکہ بعض اوقات رضا بالمنکر، ارتکاب منکر سے زیادہ دین کےلئے مضر ہوتی ہے، اس لئے اس فتنہ پر جو عقوبت اور مصیبت نازل ہوگی، وہ سب کو عام ہوگی* بہر حال مسلمانوں کو خواہ حکمران ہوں یا رعایا، علمائے کرام ہوں یا عوام الناس سب کو اجتماعی توبہ کرنی چاہئے، اپنی کمی کوتاہیوں کی معافی مانگنی چاہیے اور صدقہ وخیرات کے ذریعہ اللہ تعالیٰ کے غضب کو ٹھنڈا کرنا چاہئے، اللہ تعالیٰ ہمارے حال پر رحم فرمائے (آمین)
ـــــــــــــــــــــــــــ
*تفہیم مغرب فورم* سے مستفید ہونے کےلئے درج لنکس میں ایک پر کلک کیجئے!
(۱)
https://chat.whatsapp.com/BZnOZTOC8rGFtcPitq7d67
(۲)
https://chat.whatsapp.com/4hNMVvoqkFb2DZStQXigB7
(۳)
https://chat.whatsapp.com/GugoESJCylX1ZnsprNnKlU
(۴)
https://chat.whatsapp.com/Dxr4XY4Cco5AxVULPVYr0T
(۵)
https://chat.whatsapp.com/K9K0fNFHevH64vKbmNdK0p

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے