Home / کالم / حقارت کی اذیت*

حقارت کی اذیت*

*
ازقلم
پیا سحر
گجرات
📕📕📕📕📕
کبھی وہ میری بہت اچھی دوست تھی۔ہم دونوں ایک ہی ہوسٹل میں رہتی تھیں۔کبھی ایک کمرے میں اکٹھی بھی رہی تھیں پھر اچانک اس نے علیحدہ روم لے لیا اس کے چال چلن میں بہت فرق آنے لگاتھاجس کا مجھے بہت دکھ ہوتا۔ایک دن اس نے اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ بھاگنے کا ارادہ کر لیا۔
تب مجھ سے بالکل برداشت نا ہوا۔میں نے اس کے گھر خبر کر دی ۔پھر کیا تھا
وہ اپنی ماں کے ساتھ میرے روم پر آئی۔ وہ اپنی ماں کو پہلے سے ہی اپنے حق میں نرم کر چکی تھی ۔

“تم ہوتی کون ہو میری بیٹی پر الزام لگانے والی،تمھاری جرات کیسے ہوئی؟”
وہ بول رہی تھیں اور میں سر جھکائے سن رہی تھی۔
اس کی ماں نے مجھے خوب ڈانٹامگر میں مطمئن تھی کہ وہ غلط راہ پر جانے سے بچ گئی ہے۔
میں ان کی سب باتیں سکون سے سنتی رہی پر میرا سکون تب غارت ہوا جب جاتے جاتے اس لڑکی نے میری طرف سخت غصے اور نفرت سے دیکھتے ہوئے زمین پر کچھ اس حقارت سے تھوک دیا،جیسے میرے منہ پر تھوک رہی ہو۔
وہ دن اور آج کا دن ہے۔۔۔ وہ ذلت اور حقارت جو مجھے اس دن محسوس ہوئی تھی ۔آج بھی اسی طرح میری روح کو چھلنی کرتی رہتی ہے۔میری روح پر کچوکے لگاتی رہتی ہے۔

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے