Home / کالم / نہر کے کنارے چند لوگ

نہر کے کنارے چند لوگ

تحریر
عمیرحنفی

نہر کے کنارے چند لوگ بیٹھے علمی ادبی باتیں کررہے تھے استفادہ کےلیے بندہ کو بھی دعوت دی گئی! ان کی گفتگو کا کیا ہی خوب حسن تھا جو شروع “علم کی اہمیت و افادیت” سے ہوئی! تفاسیر میں ” بیان القرآن” پر ایک صاحب نے جامع مانع تبصرہ کیا “کہ علامہ سید انور شاہ کشمیری رحمتہ اللہ علیہ فرمایا کرتے تھے کہ” میں اردو تفاسیر کو نہیں مانتا تھا کہ ان میں کچھ کام ہوا ہوگا لیکن جب سے حضرت تھانوی رحمتہ اللہ علیہ کی تفسیر” بیان القرآن دیکھی تب سے اردو تفاسیر میں سے اس کا معترف ہوگیا ہوں حضرت تھانوی رحمتہ اللہ علیہ نے اتنا اچھا کام کیا ہے کہ لگتا ہے یہ مطالعہ نہیں بلکہ سبقاً پڑھنا پڑھے گی! پھر بات حصول علم میں مشقتوں کی پہنچی تو امام بخاری و ابن جوزی رحمتہ اللہ علیہم کا ذکر خیر ہوا موضوع جب قوت حافظہ کا شروع ہوا تو مجلس میں دو لوگوں نے کہا ہم سب کی صلاحیتوں اور ذہانت و ذکاوت کے معترف ہیں لیکن جو حافظہ محدث العصر علامہ سید انور شاہ کشمیری رحمتہ اللہ علیہ کا تھا فرمایا”کہ اگر دارالعلوم دیوبند کے کتب خانے کی ساری کتابیں جو ایک ضخیم مجموعہ تھا کو آگ لگ جائے تو فکرمند ہونے کی ضرورت نہیں انور شاہ کشمیری کے سینے میں سب محفوظ ہیں دونوں نے یک زبان ہوکر کہا سچی بات ہے دلی لگاؤ انہی کی طرف ہے تاریخ ِ پاکستان کا موضوع شروع ہوا ہی تھا کہ “سورج غروب ہوتا دکھائی دیا” تو اس وقت کا منظر بہت دلنشین لگا اس منظر کو محفوظ رکھنا بھی اچھا لگا………………….

**

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے