Home / اسلام / اللہ کا تصور!!

اللہ کا تصور!!

نماز ,یکسوئی اور اللہ کا تصور!!
تحریر ؤ تحقیق
بابرالیاس
‏کچھ موضوعات پہ انسان طبع آزمائی کرتا ہے اور کچھ موضوعات خود انسان کا انتخاب کرتے ہیں یہ وہی عنوانات ہوتے ہیں جو لفظ در لفظ آپ کو بلندیاں عطا کرتے ہیں کیونکہ وہ اپنی جہت میں آسمانی ہوتے ہیں، اسی لئے سخنوری کی حقیقی شان قرآن اور سنتﷺ سے وابستگی میں ہی جھلکتی ہے۔
ﻳَٰٓﺄَﻳُّﻬَﺎ ٱﻟَّﺬِﻳﻦَ ءَاﻣَﻨُﻮا۟ ٱﺗَّﻘُﻮا۟ ٱﻟﻠَّﻪَ ﻭَٱﺑْﺘَﻐُﻮٓا۟ ﺇِﻟَﻴْﻪِ ٱﻟْﻮَﺳِﻴﻠَﺔَ ﻭَﺟَٰﻬِﺪُﻭا۟ ﻓِﻰ ﺳَﺒِﻴﻠِﻪِۦ ﻟَﻌَﻠَّﻜُﻢْ ﺗُﻔْﻠِﺤُﻮﻥَ
اے لوگو جو ایمان لائے ہو، اللہ سے ڈرو اور اُس کی جناب میں بار یابی کا وسیلہ ڈھونڈو اور اس کی راہ میں جدوجہد کرو، شاید کہ تمہیں کامیابی نصیب ہو جائے.35
‏ہر وہ شے جس سے مغرب کی نقالی پر حرف آتا ہو وہ آج مسلمانوں نے ضرور کرنی ہے، غیر مسلم مشرک نے خودکشی کر لی تو آپ چپ رہیں یا خود کشی پر آقاﷺ کی احادیث پیش کریں تا کہ لوگوں کو اس قبیح گناہ کا علم ہو مگر آپ تو جی خیر سے خودکشی کو بہادری، ڈپریشن، دکھ اور رنج میں تول رہے ہیں، جہالت۔
ایک شخص لکھتا ہے کہ ایک مرتبہ میں اپنے ایک ¹دوست کے ساتھ نمازپڑھنے مسجد میں گیا یہ دوست ابھی نیا نیا مسلمان ہوا تھا۔ چونکہ میں مسافر تھا۔اس لئے میں نے نماز ِکسر پڑھی اور تھوڑی دیر میں مسجد سے باہر آگیا اور اپنے دوست کا باہر انتظار کرنے لگا۔ لیکن اسے مسجد سے باہر آنے میں تقریبا ً پون گھنٹہ لگ گیا۔ مجھے کچھ انتظار کی کوفت سی ہورہی تھی کہ اس کو میرا کچھ خیال کرنا چاہیئے۔ مجھے باہر کھڑا کرگیا ہے اور خود پتا نہیں کن کاموں میں مصروف ہوگیا ہے۔ کچھ دیر بعد وہ مسجد سے باہر آیا اور انتہائی عاجزی اور شرمساری سے کہنے لگا۔
“اصل میں تم لوگ پیدائشی مسلمان ہو اور بچپن سے ہی نماز پڑھتے اور اللہ کا ذکر کرتے اور سنتے چلے آرہے ہو۔ اس لئے آپ لوگوں کو اللہ کا تصور لانے میں آسانی ہوتی ہے۔ مجھے تو تقریبا آدھا گھنٹہ لگ جاتا ہے اپنے ذہن میں اللہ کا تصور جماتے ہوئے۔کہ میں اللہ کی بلند بارگاہ میں کھڑا ہوں۔ آپ مہربانی فرما کر مجھے بھی کوئی ایسا طریقہ بتادیں کہ جس سے اللہ کا تصور باندھنے میں آسانی ہوجائے۔ اور مجھے نماز میں یکسوئی پیدا کرنا آسان ہوجائے۔”
میں نے جب اس کی گفتگو سنی تو میری آنکھوں سے آنسو جاری ہوگئے اور میرا سر شرم اور ندامت سے جھک گیا۔ کیونکہ میرے دامن میں اپنے ایمان کی کمتری کے سوا کچھ نہیں تھا۔
پانی پانی کر گئی مُجھ کو قلندر کی یہ بات
تُو جھُکا جب غیر کے آگے، نہ من تیرا نہ تن
(اقبال)
ہم عبادت اللہ کی کر رہے ہوتے ہیں اور خیالوں میں کسی اور کے جھکے ہوتے ہیں
تیرے سجدے کہیں تجھے کافر نہ کر دیں محسن
تو جھکتا کہیں اور ہے سوچتا کہیں اور
شہنشاہِ خوش خِصال، پیکرِ حُسن وجمال صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کا فرمانِ عالیشان ہے :”سب سے بدتر چور وہ ہے جو اپنی نماز ميں چوری کرتا ہے۔” صحابہ کرام علیہم الرضوان نے عرض کی :”يارسول اللہ عزوجل وصلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم! کوئی شخص اپنی نماز ميں کس طرح چوری کرسکتا ہے؟” تو آپ صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم نے ارشاد فرمایا :”وہ اس کے رکوع و سجود پورے نہيں کرتا۔” يا ارشاد فرمايا : ”وہ رکوع و سجود ميں اپنی پيٹھ سيدھی نہيں کرتا۔”
( المسند للامام احمد بن حنبل،الحدیث:۲۲۷۰۵،ج۸،ص۳۸۶)
حدیث میں کیا نفیس تمثیل ہے یعنی مال کے چور سے نماز کا چور بدتر ہے کیونکہ مال کا چور اگر سزا پاتا ہے تو کچھ نفع بھی اٹھالیتا ہے مگر نماز کا چور سزا پوری پائے گا نفع کچھ حاصل نہیں کرتا،نیز مال کا چور بندے کا حق مارتا ہے نماز کا چور اﷲ کا حق،نیز مال کا چور یہاں سزا پاکر عذاب آخرت سے بچ جاتا ہے مگر نماز کے چور میں یہ بات نہیں،نیز بعض صورتوں میں مال کے چور کو مالک معاف کرسکتا ہے لیکن نماز کے چور کی معافی کی کوئی صورت نہیں۔خیال کرو کہ جب نماز ناقص پڑھنے والوں کا یہ حال ہے تو جو سرے سے پڑھتے ہی نہیں ان کا کیا حال ہے۔
‏توحید وہ میزان ہے کہ جس کے سامنے ایمان کے سوا کوئی شے نہیں ٹھہر سکتی یہ وہ معیار حق ہے کہ اسکے سامنے بیٹا کافر اور باپ سیدنا نوحؑ ہوں، بیوی کافر اور شوہر سیدنا لوطؑ ہوں، باپ کافر اور بیٹے سیدنا ابراہیمؑ ہوں اور چچا کافر مگر بھتیجے محمدﷺ ہو تو بھی آگ سے نہیں بچ سکتے۔
کائنات میں سب سے بڑی شے ہی توحید ہے جو اللہ کا نہ ہوا وہ کسی کا بھی نہیں ہو سکتا، لہذ سستی جذباتیت سے دور رہیں اور قرآن و سنت کے بالمقابل اپنی تشکیک زدہ عقل لے کر مت آئیں۔
اللہ ہمیں نمازوں میں خشوع و خضوع عطا فرمائے۔ آمین,,,

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے