Home / کالم / باپ کی عاجزانہ فریاد”*

باپ کی عاجزانہ فریاد”*

*”ایک باپ کی عاجزانہ فریاد”*
تحریر
عمیرحنفی
📕📕📕📕📕📕
جمعہ کی نماز سے قبل بیان شروع ہوا تو ابھی خطبہ کی ابتداء نہیں ہوئی تھی کہ ایک شخص مجمع سے اٹھا ہاتھ باندھتے ہوئے زور و قطار رونے لگ گیا ہچکیاں بندھ گئیں اور سسکیاں بھرتے ہوئے کہنے لگا! مولوی صاحب! آپ کو اللہ کا واسطہ” آج ماں باپ کی عظمت بیان کردیں” بندہ نے درد کو سمجھتے ہوئے حامی تو بھر لی لیکن منبر پر بیٹھے بیٹھے از راہ تجسس پوچھا
محترم بزرگوار! پس منظر کیا ہے اس قدر رنجیدہ کیوں ہیں؟ تو میری حیرت کی انتہا نہ رہی وہ پاؤں کی طرف لپکا اور زور زور سے رونے لگا کہا *” میرا ایک بیٹا ہے اس کو پڑھایا ہے آج نوکری لگ گئی تو مجھے دھکے دیتا ہے گھر سے نکالتا ہے! مارتا بھی ہے”* میں اس وقت لفظ انسانیت کو کوس رہا تھا تم ہمارے ہاں کیسے آ گھسی ہو! تجھے پتہ نہیں ہم درندے ہیں بلکہ درندوں سے چند قدم آگے ہیں ہم ایسے سماج میں جی رہے ہیں جہاں باپ منتیں کرتا پھر رہا ہے جہاں باپ کو بیٹے سے ڈر ہے

یہ ایک سچا واقعہ ہے جو خود بندہ کے ساتھ ساتھ پیش آیا قسام عالم ہمیں والدین کی قدر اور شعور نصیب فرمائے آمین

**

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے