Home / اردو ادب / آخری ہچکی”

آخری ہچکی”

“اازقلم:
آس یراعہ
کبیر والا
📕📕📕📕
میں نے اس کو تب رنگ بدلتے دیکھا جب میں مکمل طور پر اس کے رنگ میں ڈھل چکی تھی۔وہ چڑھتے دن کا سورج تھا اور میں ڈوبتی شام کے جیسی ۔اسکا اپنا ایک رنگ تھا اور میں نے پوری کائنات کے سارے رنگ محض اس کی خاطر مستعار لے رکھے تھے۔۔اس کا اور میرا کوئی جوڑ نہیں تھا لیکن پھر بھی دل نے اس سے جڑ جانے کی تمنا کر ڈالی تھی۔۔پھر کیا؟؟؟۔۔۔۔مخمل میں ٹاٹ کے پیوند جیسی تمنائیں بھلا کہاں پوری ہوتی ہیں؟۔۔۔ایک ارمان بن کر دل کی گم نام سی بھول بھلیوں میں تادمِ مرگ بھٹکتی رہتی ہیں۔پھر جب ان بھول بھلیوں کی دیواروں سے سر پٹخ پٹخ کر آخری سانس لیتی ہیں تو زندگی کی آخری ہچکی بھی بھری جا چکی ہوتی ہے۔۔اور وہ ارمان کسی کے بھی دل کو چھوئے بغیر ایک حسرت زدہ دل کی قبر میں ہمیشہ ہمیشہ کیلیے دفن ہو جاتا ہے۔۔۔

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے