Home / کالم / حقیقی یوم مزدور کیا ہے”

حقیقی یوم مزدور کیا ہے”

“تحریر:
حافظ عمیرحنفی

جیو نیوز ، اے آر وائے نیوز ، ایکسپریس نیوز ، 92 نیوز، دنیا نیوز ، سماء نیوز ، و دیگر اسی کے لگ بھگ نیوز چینلز یوم مزدور پر کئی لاکھ روپے لگا کر مزدوروں کے حق میں پروگرام کرینگے! ہزاروں کالم نگار بیسیوں مضمون نویس آج ملک کے مختلف اخبارات میں اپنا اپنا درد بیان کرینگے! شعراء اپنی شاعری کے ذریعے مزدوروں کے حقوق میں اپنا تخیل پیش کرینگے! ہزاروں لوگ نیٹ پیکج لگا کر یوٹیوب چینل پر فیس بک پیجز پر مزدور کی کہانی کو بیان کرینگے!
کئ جگہوں پر مظاہرے اور کروڑوں روپے کی مہنگی تقریبات بھی ہونگی! بہت سارے لوگ پوسٹس کے ذریعے بھی اپنا درد مزدوروں کے لیے بیان کرینگے! لیکن جان کی امان پاؤں تو سوال کرسکتا ہوں!!!

کیا ہمارے ان پروگراموں ، تقریبات، کالمز شاعری اور یوٹیوب چینلز پر کہانیوں کی وجہ سے مزدور کو کتنا فائدہ ہوتا ہے؟ کتنے مزدوروں کو حقوق ملے؟ کتنے لوگوں کو نوکری ملی؟ کتنے گھروں کے چولہے جلے؟ کتنے مزدوروں کے بچےسکولوں کی جانب گئے؟ کتنے مزدور پچھلے سال سے اس سال راحت کی زندگی گزار رہے ہیں؟ یقیناً جواب نفی میں ہوگا پھر یہ خالی نعرے اور عمل سے خالی باتیں کس کام کی! تو آئیے عمل سے کام کرتے ہیں میرے ناقص خیال کے مطابق اب ان کے حقوق کا جتنا بھی زور لگالیں مزید کچھ ہونا نہیں ہے آپ اپنے طور پر جتنا ممکن ہو ان غریبوں اور مزدوروں کے دست بازو بنیں! خود اٹھیں انہی مزدوروں کو سینے کے ساتھ لگائیں! ان کے گھروں کو آباد اور خوشیوں سے بھریں

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے