Home / اردو ادب / اُردُو یا لشکری زبان

اُردُو یا لشکری زبان

ترتیب ؤ انتخاب
ریحانہ کوثر سرگودھا
🌺🌺🌺🌺🌺🌺
اُردُو یا لشکری زبان[8] (یا جدید معیاری اردو) برصغیر کی معیاری زبانوں میں سے ایک ہے۔ یہ پاکستان کی قومی اور رابطہ عامہ کی زبان ہے، جبکہ بھارت کی چھے ریاستوں کی دفتری زبان کا درجہ رکھتی ہے۔ آئین ہند کے مطابق اسے 22 دفتری شناخت زبانوں میں شامل کیا جاچکا ہے۔ 2001ء کی مردم شماری کے مطابق اردو کو بطور مادری زبان بھارت میں 5.01% فیصد لوگ بولتے ہیں اور اس لحاظ سے یہ بھارت کی چھٹی بڑی زبان ہے جبکہ پاکستان میں اسے بطور مادری زبان 7.59% فیصد لوگ استعمال کرتے ہیں، یہ پاکستان کی پانچویں بڑی زبان ہے۔ اردو تاریخی طور پر ہندوستان کی مسلم آبادی سے جڑی ہے۔[حوالہ درکار] بعض ذخیرہ الفاظ کے علاوہ یہ زبان معیاری ہندی سے قابل فہم ہے جو اس خطے کی ہندوؤں سے منسوب ہے۔[حوالہ درکار] زبانِ اردو کو پہچان و ترقی اس وقت ملی جب برطانوی دور میں انگریز حکمرانوں نے اسے فارسی کی بجائے انگریزی کے ساتھ شمالی ہندوستان کے علاقوں اور جموں و کشمیر میں اسے سنہ 1846ء اور پنجاب میں سنہ 1849ء میں بطور دفتری زبان نافذ کیا۔ اس کے علاوہ خلیجی، یورپی، ایشیائی اور امریکی علاقوں میں اردو بولنے والوں کی ایک بڑی تعداد آباد ہے جو بنیادی طور پر جنوبی ایشیاء سے کوچ کرنے والے اہلِ اردو ہیں۔ 1999ء کے اعداد وشمار کے مطابق اردو زبان کے مجموعی متکلمین کی تعداد دس کروڑ ساٹھ لاکھ کے لگ بھگ تھی۔ اس لحاظ سے یہ دنیا کی نویں بڑی زبان ہے۔

اردو (لشکری)
Urdu example.svg
اردو اردو حروف تہجی میں (نستعلیق )
تلفظ
معاونت:بین الاقوامی اصواتی ابجدیہ برائے اردو و ہندی: [ˈʊrd̪u] ( سنیے)
مستعمل
پاکستان اور بھارت[1] مقامی متتکلمین
65 ملین (80% بھارت میں[2]) (2007)ne2007
دوسری زبان: 94 ملین پاکستان میں (1999).[2] خاندان_زبان
ہند۔یورپی
ہند ایرانی
ہند۔آریائی
مرکزی ہند-آریائی
مغربی ہندی
کھڑی بولی[3] اردو-ہندی[3] اردو
نظام کتابت
فارسی-عربی رسم الخط (اردو حروف تہجی)
بھارتی اردو بریل (بھارتی)
پاکستانی اردو بریل
رومن اردو
Signed forms
بھارتی اشارتی نظام (ISS)[4] اشارتی اردو[5] باضابطہ حیثیت
سرکاری زبان
پاکستان
بھارت؛ ریاستیں اور یونین علاقہ:
بہار
دہلی (قومی دارالحکومت علاقہ)
جموں و کشمیر
اتر پردیش
جھارکھنڈ
مغربی بنگال (علاقے جہاں اردو بولنے والے دس فیصد سے زیادہ ہیں)
تلنگانہ
نظمیت از
ادارہ فروغ قومی زبان
قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان[6] رموزِ زبان
آیزو 639-1
ur
آیزو 639-2
urd
آیزو 639-3
urd
گلوٹولاگ
urdu1245[7] لسانی اثرات
59-AAF-q(مع ہندی،
بشمول 58 تنوع: 59-AAF-qaa to 59-AAF-qil)
Urdu official-language areas.png
وہ خطے جہاں اردو کو سرکاری یا مقامی زبان کا درجہ حاصل ہے
(دیگر)علاقے جہاں صرف ایک علاقائی زبان سرکاری ہے
ویکیپیڈیا، آزاد دائرۃ المعارف اردو میں
اُردو کا بعض اوقات ہندی کے ساتھ موازنہ کیا جاتا ہے۔ اُردو اور ہندی میں بُنیادی فرق یہ ہے کہ اُردو نستعلیق رسم الخط میں لکھی جاتی ہے اور عربی و فارسی الفاظ استعمال کرتی ہے۔ جبکہ ہندی زبان دیوناگری رسم الخط میں لکھی جاتی ہے اور سنسکرت الفاظ زیادہ استعمال کرتی ہے۔ کچھ ماہرینِ لسانیات اُردو اور ہندی کو ایک ہی زبان کی دو معیاری صورتیں گردانتے ہیں۔ تاہم، دیگر ماہرین اِن دونوں کو معاش اللسانی تفرّقات کی بنیاد پر الگ الگ سمجھتے ہیں۔ بلکہ حقیقت یہ ہے کہ ہندی، اُردو سے نکلی ہے۔ اسی طرح اگر اردو اور ہندی زبان کو ایک سمجھا جائے تو یہ دنیا کی چوتھی بڑی زبان ہے۔

اردو زبان باوجود دنیا کی نئی زبانوں میں سے ہونے اپنے پاس معیاری اور وسیع ذخیرہ ادب رکھتی ہے۔ خاص کر جنوبی ایشیائی زبانوں میں اردو اپنی شاعری کے حوالے سے جانی جاتی ہے۔

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے