Home / کالم / جھک جاؤ !!

جھک جاؤ !!

تحریر
بابرالیاس
ایڈمن
قلمدان ڈاٹ نیٹ

‏جیسے ممکن ہو بچا لو یہ اُجڑتے ہوئے شہر__
پھر نہ یہ رنگ، نہ چہرے، نہ مکاں دیکھو گے__🔥

‏ذات کا خمیدہ پن ہمیشہ اس بوجھ سے آتا ہے جو ہم اپنی ذات کی خوشی کیلئے اپنی ذات سے بڑھ کر اٹھاتے ہیں۔
‏‎#بسم_الله_الرحمن_الرحيم
اور ہم نے کتنی ہی (ایسی) بستیوں کو برباد کر ڈالا جو اپنی خوشحال معيشت پر غرور و ناشکری کر رہی تھیں تو یہ ان کے (تباہ شدہ) مکانات ہیں جو ان کے بعد کبھی آباد ہی نہیں ہوئے مگر بہت کم، اور (آخر کار) ہم ہی وارث و مالک ہیں۔
‎#سورۃ_القصص
‎#آیت_نمبر58
‏کرونا ایک جھلک ہے کہ کس طرح خبریں ہمارے حالات اور ہماری حالت دونوں کا رخ موڑنے کی صلاحیت رکھتی ہیں، بذات خود مشاہدہ بہت کم ہے لیکن دیکھ لیں کہ خبروں کے انتشار نے( قطع نظر حقانیت یا لغو بیانی) کسطرح ہماری زندگیوں کو بدل دیا ہے، معیشت سے لے کر معاشرت تک اب خبر کے ہاتھ میں ہے۔
‏‎موجوده دور میڈیا کا ھے اور میڈیا حالات کے مطابق لوگوں کی راے بدلنے میں اھم کردار ادا کر رھا ھے ۔ عالمی سطح پر یهودو نصاری کی برتری کی وجه میڈیا ھی ھے اسی کو دیکھتے ھوے دجالی میڈیا کی اصطلاح ایجاد ھوی ھے.

‏کرونا کے خلاف موم بتیاں جلاؤ ، پلے کارڈ لے کر احتجاج پر نکلو ، فیس بک کے ٹرینڈ چلا ؤ ۔ اللہ کے منکروں ! نکلو اب اللہ کے مقابل ، گھروں میں قید کر کے رکھ دیالی میرے اللہ نے تم سب کو ۔ آج چیلنج کرو اس کی خدائی کو جو روز کیا کرتے تھے ۔ تمہاری اوقات ہی کیا ہے.
‏‎زمین والوں نے کہا!!
میرا جسم میری مرضی
آسمان والے نے کہا!!!!!!
جسم بھی میرا مرضی بھی میری پر اللہ کا قانون ہے منکروں پر عذاب جب لاتا ہے تو ساتھ میں نیک لوگوں کو بھی اس عذاب میں مبتلا کردیتا ہے کہ تم لوگ کیوں خاموش تھے۔
کہتے ہیں کہ
‏‎پاکستان میں ‎#کرونا پھیلانے کا بنیادی سبب مذہبیت کے تبلیغی اجتماع ٹھہرے،
میں کہتا ہوں کہ
‏‎اٹلی , امریکہ , چین, فرانس اور پورے یورپ میں کونسا دینیاجتماع ہوا تھا ؟
کونسے مولوی وجہ تھے ؟
سوائے فحاشی کے اجتماع کے ، وہاں کرونا کونسی طوائفیں لے کر گئیں تھیں؟
‏ابھی چار چھ دن پہلے تک وقت رک ہی نہیں رہا تھا۔ کب رات ہوئی کب دن نکلا کچھ پتہ ہی نہ چلتا تھا۔ نہ کام پورے ہو رہے تھے نہ آرام۔ کھانا بھاگم بھاگ تو نمازیں لپک جھپک۔ ہر وقت ایک افراتفری۔ اب فرصت ہی فرصت ہے تو سمجھ ہی نہیں آ رہا کیا کریں۔ ٹک کے گھروں میں بیٹھنا دوبھر لگ رہا ہے۔

‏اگر آپ کا پڑوسی دیوبندی بریلوی اہلحدیث سنی یا شیعہ ہے تو اس کا حساب وہ خود دے گا لیکن اگر وہ بھوکا مر گیا تو یاد رکھو حساب آپکو دینا ہو گا.
‏پاکستان نے کئی آفات دیکھی ہیں وہ پچھلی دہائی کا خوفناک زلزلہ ہو یا اس دہائی کے خطرناک سیلاب لیکن حکومتی لحاظ سے جو یتیمی و یسیری اور لاوارثی کی صورتحال اب دکھائی دے رہی ہے اسکی مثال ہماری سیاسی تاریخ میں نہیں ملتی۔
اللہ کریم رحمت خاص فرماۓ…..

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے