Home / اسلام / درس قرآن نمبر86* *مخالفین سے حسن سلوک کا حکم*

درس قرآن نمبر86* *مخالفین سے حسن سلوک کا حکم*

*مدرس:
محمد عثمان شجاع آبادی
📕📕📕📕📕📕📕
بسم اللہ الرحمن الرحیم
أَلَمْ تَعْلَمْ أَنَّ اللّہَ لَہُ مُلْکُ السَّمَاوَاتِ وَالأَرْضِ وَمَا لَکُم مِّن دُونِ اللّہِ مِن وَلِیٍّ وَلاَ نَصِیْرٍ ٭أَمْ تُرِیْدُونَ أَن تَسْأَلُواْ رَسُولَکُمْ کَمَا سُءِلَ مُوسَی مِن قَبْلُ وَمَن یَتَبَدَّلِ الْکُفْرَ بِالإِیْمَانِ فَقَدْ ضَلَّ سَوَاء السَّبِیْلِ ٭وَدَّ کَثِیْرٌ مِّنْ أَہْلِ الْکِتَابِ لَوْ یَرُدُّونَکُم مِّن بَعْدِ إِیْمَانِکُمْ کُفَّاراً حَسَداً مِّنْ عِندِ أَنفُسِہِم مِّن بَعْدِ مَا تَبَیَّنَ لَہُمُ الْحَقُّ فَاعْفُواْ وَاصْفَحُواْ حَتَّی یَأْتِیَ اللّہُ بِأَمْرِہِ إِنَّ اللّہَ عَلَی کُلِّ شَیْْء ٍ قَدِیْرٌ ٭وَأَقِیْمُواْ الصَّلاَۃَ وَآتُواْ الزَّکَاۃَ وَمَا تُقَدِّمُواْ لأَنفُسِکُم مِّنْ خَیْْرتَجِدُوہُ عِندَ اللّہِ إِنَّ اللّہَ بِمَا تَعْمَلُونَ بَصِیْر٭
ترجمہ: تمہیں معلوم نہیں کہ آسمانوں اور زمین کی بادشاہت اللہ کی ہی ہے اور اللہ کے سوا تمہارا کوئی دوست اور مدد گار نہیں۔۷۰۱۔ کیا تم یہ چاہتے ہو کہ اپنے پیغمبر سے اسی طرح کے سوال کرو جس طرح کے سوال پہلے موسیٰ سے کئے گئے تھے اور جس شخص نے ایمان (چھوڑ کر اس) کے بدلے کفر لیا وہ سیدھے رستے سے بھٹک گیا ٭ بہت سے اہلِ کتاب اپنے دل کی جلن سے یہ چاہتے ہیں کہ ایمان لا چکنے کے بعد تم کو پھر کافر بنا دیں حالانکہ ان پر حق ظاہر ہو چکا ہے تو تم معاف کر دو اور درگزر کرو یہاں تک کہ اللہ تعالیٰ اپنا (دوسرا) حکم بھیجے بیشک اللہ تعالیٰ ہر بات پر قادر ہے ٭ اور نماز قائم کرو اور زکوٰۃ دیتے رہو اور جو بھلائی اپنے لئے آگے بھیج رکھو گے اسکو اللہ کے ہاں پا لو گے۔ کچھ شک نہیں کہ اللہ تعالیٰ تمہارے سب کاموں کو دیکھ رہا ہے ٭
*ربط:*
پچھلی آیات مبارکہ کی طرح اس آیت میں بھی یہود کی نافرمانیوں اور من مانیوں کا ذکر ہے۔
*تفسیر:*
أَمْ تُرِیْدُونَ أَن تَسْأَلُواْ……اس آیت مبارکہ میں یہود کی روش کو ذکر فرماکر مسلمانوں کو ان کے نقش قدم پر چلنے سے منع فرمایا جارہاہے،یہود کی یہ ہمیشہ سے کوشش تھی کہ کس طرح مسلمانوں کو ان کے مذہب سے پھیردیں اس لئے وہ ہر وقت عجیب وغریب قس کے سوالات کرتے رہتے تھے یہود مسلمانوں کو بھی اکساتے تھے کہ تم یہ بھی پوچھو،یہ بھی سوال کرو،تو اللہ تعالیٰ متنبہ کرتے ہوئے فرمایاکہ اس معاملے میں یہود کی روش اختیار کرنے سے بچو،بہت زیادہ سوال نہ کیا کرو،بس جتنا کہا جائے اس پر عمل کرو۔
وَدَّ کَثِیْرٌ مِّنْ أَہْلِ الْکِتَاب……اس آیت مبارکہ میں اللہ تعالیٰ نے یہود کے دل کی منشاء کو بیان کیا ہے کہ یہودچاہتے ہیں کہ آپ کو ایمان لانے کے بعد دوبارہ سے کافر بنادیں لہذا مسلمانوں! ان سے بچ کر رہو،ان کے سامنے حق ظاہر ہوچکا ہے اس کے باوجود ا ن لوگوں نے مخالفت کرنی ہے،آپ ان کے ساتھ عفو درگزر کا رویہ اختیار کریں،یہاں تک کہ روز قیامت اللہ حق کو واضح فرمادیں گے۔
یہود کے ساتھ عفو درگزر کے معاملے کا حکم اس لئے دیا گیا کہ ان کا مقصد بات کو سمجھنا نہیں ہوتا بلکہ شکوک شبہات ڈالنے ہوتے ہیں،اس وجہ سے ان کی بات کا برا نہ منایاجائے،آج ہمیں بھی ان لوگوں کے ساتھ یہی رویہ اختیار کرنا چاہیے جولوگ اسلام کے خلاف زہر اگلتے ہیں،ہمارا نرم رویہ ہی ایک دن ان کو راہِ راست پر لے آئے گا۔
اللہ ہمیں ہر فتنے سے محفوظ فرمائے اور دین حق پر عمل کی توفیق عطافرمائے۔آمین

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

One comment

  1. Avatar

    You could certainly see your enthusiasm in the article you write.
    The arena hopes for more passionate writers
    such as you who aren’t afraid to say how they believe.
    At all times follow your heart.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے