Home / کالم / حضرت فاطمہ زہرا رضی اللہ تعالی

حضرت فاطمہ زہرا رضی اللہ تعالی

تحریروتحقیق:
سجاد حسین
آج جس ہستی کی ذات اقدس پر قلم اٹھایا وہ کوئی اور نہیں بلکہ دختر رسولؐ خدا ہیں،
اپ کے القابات میں سے ایک لقب حجت الله الکبریٰ ہے .
آپکے اس لقب سے آپکی قدر و منزلت و معرفت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے جس پر امام حسن عسکری علیہ السلام کی ایک حدیث موجود ہے ، آپ فرماتے ہیں کہ :
” نحن حجج اللہ وامنا فاطمۃ حجۃ اللہ”
“ہم آئمہ اللہ سبحانہ وتعالیٰ کی طرف سے حجت ہیں اورہماری ماں فاطمہ اللہ سبحانہ وتعالیٰ کی طرف سے ہم آئمہ پر حجت ہیں.
اس عظیم ہستی کی شخصیت اور مقام وعظمت کی انتہا تک رسائی ہونا کسی بھی عام انسان کی بس کی بات نہیں ہے ، مختلف احادیث میں آئمہ اطہارؑ نے آپکی منزلت کو گاہے بگاہے واضح کرنے کی کوشش کی،
ایک سائل نے امام جعفر صادقؑ سے پوچھا کہ ،
حضرت فاطمہ زہرا ؑ کا نام ” زہراؑ ” یعنی درخشندہ کیوں ہے ؟
تو آپ نے جواب دیا کہ ”
جب آپ محراب میں عبادت کے لئے کھڑی ہوتی تھیں تو آپ کا نور اہل آسمان کو اسی طرح چمکتا ہوا دکھائی دیتا تھا کہ جس طرح ستاروں کا نور ،زمین والوں کے لئے جگمگاتا ہے .
فاطمہؑ اس عظیم ہستی کا نام ہے کہ جنکی تخلیق باقی آئمہ و انبیا حتی کہ اپنے باپ احمد مرسلؐ کی طرح بھی نہیں ہوئی ، الله نے رسول الله کو پاک ہستیوں کے اصلاب سے گزار کر خلق کیا اور فاطمہ زہراؑ وہ عظیم ہستی ہیں کہ جنکا نور پروردگار عالم نے جنت کے شجرہ طوبیٰ میں رکھا اور معراج کی شب سیب کی شکل میں رسول اکرمؐ کو عطا کیا، پھر فرما دیا
إِنّا أَعطَيناكَ الكَوثَرَ .
لہذا اس میں کوئی شک نہیں کہ حضرت زہرا سلام اللہ علیہا اور باقی انسانوں کے مابین تفاوت ہے کہ زہرا ء سلام اللہ علیھا کے جسمانی اور مادی وجود مبارک میں جنت کی طبیعت پوشیدہ ہے جب کہ باقی انسانوں کے وجود، ایسی خصوصیت سے محروم ہے
باقی انسان بلکہ تمام انبیا و آئمہ سے الگ ہے وجود ذات فاطمہ زہراؑ ….
تو کیوں نہ ایسا کہنا درست ہوگا کہ آئمہؑ کی ذات میں جو صفات منتشر تھیں (بطور امام) وہ سب جناب زہراؑ کی تنہا ذات میں یکجا تھیں ، مردوں میں نبی آئے ، وصی آئے، امام آئے مگر عورتوں میں بہت کم کامل ترین عورتیں آئیں، اور ان میں فاطمہ زہراؑ نمایاں ہیں کہ جن پر انبیاء و آئمہ فخر کرتے ہیں . اور اکیلی فاطمہ سلام اللہ علیہا تمام فضائل کے لئیے کفایت کرتی ہیں اور عورتوں کیلیے یہی فخر کافی ہے کہ
جناب زھراؑ ایک عورت تھیں ، اور بطور ماں، بیٹی، زوجہ عالمین کیلئے اسوہ حسنہ قرار پائیں
جنکی دین خدا میں اثر کا اندازہ یوں لگایا جاسکتا ھے کہ انکی رضا اللہ کی رضا اور انکی ناراضگی اللہ کی ناراضگی قرار پائی .آپ کی ولادت تمام اہل ایمان کو مبارک ہو.

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے