Home / کالم / رات

رات

تحریر:
سجاد حسین
📕📕📕📕

آج دل چاہا کہ رات کے بارے میں کچھ لکھوں ۔آپ بھی سوچیں گے بھلا یہ کیا موضوع ہوا۔تو جناب رات کی بھی اپنی ایک داستان ہے پروردگار عالم نے رات بنائ آرام کے واسطے ۔اور عبادت کے واسطے اور دن بنایا کام کاج کے لئے ۔
شب زندہ داروں کے لئے رات ایک نعمت ہے ۔جب سارا عالم آرام کرتا ہے تو یہ زاھد یہ ولی اپنے رب سے مناجات کرتے ہیں ۔اسے آواز دیتے ہیں ۔اس سے باتیں کرتے ہیں ۔رات تو ان کے لئے ایک تحفے سے کم نہیں
مختلف ادوار زندگی میں رات انسان پر مختلف اثر کرتی ہے بچپنے میں سارا دن کے کھیل کود کے بعد بچے ماں باپ سے لپٹ کر سو جاتے ہیں ۔پھر لڑکپن آیا نئے نئے جذبات خواہشات امنگیں اور یہ ہی جوانی کا خاصہ ہے ۔کبھی محبوب کی یاد سونے نہیں دیتی تو کبھی آنے والے دن میں نئے نئے ملنے کے بہانے ۔کالج گھر یونیورسٹی ۔نت نئ شرارتیں
اور جب سے یہ موبائل عام ہوئے تو راتوں کو پیکج کی وجہ سے لڑکے لڑکیوں کی موج لگی ہوئ ہے. ساری رات ایک دوسرے سے باتیں اور اس میں کوئی تخصیص نہیں کہ کس قسم کی باتیں ۔قارئین آپ خود بھی سمجھدار ہیں ۔۔
کبھی کسی کی یادیں سونے نہیں دیتیں تو کبھی کسی کی ملاقات کی خوشی میں نیند نہیں آتی ۔
کچھ دل جلے بھی ہوتے ہیں جانے انجانے عشق کر بیٹھتے ہیں ۔وہ عشق سپھل نہیں ہوتا اب بے چارگی کی وہ منزل ہے کہ نہ جائے رفتن نہ پائے ماندن رات ایک عذاب بن کر اترتی ہے چاندنی جی جلاتی ہے ۔اندھیری راتیں اور وحشت جگاتی ہیں نجانے نیند کیوں نہیں آتی تمہارا ہر رنگ تمہاری ہر ادا تمہاری خشبو رگ و پے میں درد جگاتی ہے اور میں ہر رات اک نئے درد اک نئ وحشت سے دوچار ہوتاہوں ۔کبھی رات کے سناٹے میں تمہاری آواز صدائے جرس کی مانند دور بہت دور سے آتی ہے ۔جیسے صحرائی علاقے کی ٹھنڈی مست ہوا میں تم کہیں بیٹھی مجھے بلاتی ہو ۔میں کانپ کر لرز,کر اک وحشت و درد,کے عالم میں تمہیں ڈھونڈنے دروازے سے باہر گھپ اندھیرے صحن میں چلا جاتا ہوں ۔
کبھی ستاروں میں تو کبھی چاند, میں تم ہی تم دکھائ دیتے ہو ۔آ جاو پریتم ۔آ جاو تیری دیوانا مرتا پگھلتا جا رہا ہے میرے ناکردہ گناہوں کی اتنی کڑی سزا ۔۔۔۔
اے رات تو میری زندگی کے اجالوں کو نگل گئ ۔۔۔۔آہ
تیرے عشق نچایا کر کے تھیا تھیا ۔چھتی آویں وے طبیبا نہی تے میں مر گئ آں

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے