Home / کالم / بیمار معاشرہ اور ہم

بیمار معاشرہ اور ہم

تحریر ؤ ترتیب
بابرالیاس

‏ہمارے معاشرے میں پسند کی شادی، دوسری شادی اور بسا اوقات صرف شادی، زنا سے بڑا جرم تصور ہوتا ہے,,,,

ہماری ایک بہت بڑی شخصیت فرمایا کرتے تھے کہ دو، تین اور چار شادیوں کے بارے میں برصغیر کی مسلمان بیبیوں کے عقائد ہنود خواتین والے ہیں. اور بیوہ کی شادی سے متعلق تمام مسلمانوں کے عقائد ہنود والے ہیں. جو ابھی تک قائم ہیں.

پھر آج تک منگل/بدھ کو پاکستان میں گوشت نہیں……بکتا. ان دو دن مشریکینء ہند گوشت نہیں کھاتے. ہم آج اس کے پابند بیٹھے ہیں. پنجاب اور سندھ کے لوگ آج تک گائے کھاتے ہوئے کراہت محسوس کرتے ہیں، اور بڑے کا گوشت کھانے والے کو حقارت کی نظر سے دیکھتے ہیں. عموما” یہ فقرہ کہا جاتا ہے:

“یار، بڑے کا گوشت بھی کوئی کھاتا ہے!”
‏‎یہ ایسا ہی ہے اور اگر ایسا ہی رہا تو بہتری ممکن نہیں ہے اپنے بچوں کو سمجھانا ہوگا … کہ نکاح ہمیشہ قابل احترام فعل ہے..اور تاقیامت رہے گا,
‏‎تلخ حقیقت۔۔
لیکن اس میں قصوروار بھی ہم خود ہی ہیں۔ ہمارے معاشرے میں ایسی مثالیں بھی نہ ہونے کے برابر ہیں کہ دو یا دو سے زائد بیویوں والا، تمام بیویوں کے ساتھ خوش و خرم زندگی گزار رہا ہو!! یہ کم علمی ہے, لا دینی ہے, خاندانی فضول رسم و رواج کا بول بالا ہے, ورنہ اسلام تو سچ ہے,
‏‎کچھ اہل علم ؤ فن دوسری شادی کو غلط بولتے ہیں . ان کو سمجھایا کرو کہ ایسا کہنامناسب نہیں یہ ہندو کلچر ہے. اسلامی شریعت میں یہ چیز بالکل غلط نہیں ہے بلکہ اس سے معاشرے میں بہتری آ سکتی ہے,
‏‎‎دوسری شادی ہرگز غلط نہیں کیونکہ شریعت کی اجازت ہے مگر دوسری شادی کرنے والے کو مطمئن اور ہنسی خوشی زندگی گذارتے کم ہی دیکھا ہے وجہ ناانصافی ہوتی ہے,
ہمارے معاشرے میں مردوں کی غیرت اور عورتوں کے حقوق دونوں کو خلاف شرع استعمال کیا جاتا ہے۔

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے