Home / اسلام / درس قرآن نمبر 55* *یہود کو دعوتِ ایمان*

درس قرآن نمبر 55* *یہود کو دعوتِ ایمان*

*مدرس:
محمدعثمان
شجاع آبادی

بسم الرحمن الرحیم

وَآمِنُواْ بِمَا أَنزَلْتُ مُصَدِّقاً لِّمَا مَعَکُمْ وَلاَ تَکُونُواْ أَوَّلَ کَافِرٍ بِہِ وَلاَ تَشْتَرُواْ بآیَاتِیْ ثَمَناً قَلِیْلاً وَإِیَّایَ فَاتَّقُونِ ٭
ترجمہ: اور جو کتاب میں نے (اپنے رسول محمد ﷺ پر) نازل کی ہے جو تمہاری کتاب (تورات) کو سچا کہتی ہے اس پر ایمان لاؤ اور اس سے منکر اوّل نہ بنو اور میری آیتوں میں (تحریف کر کے) ان کے بدلے تھوڑی سی قیمت (یعنی دنیاوی منفعت) نہ حاصل کرو اور مجھ ہی سے خوف رکھو ٭
*ربط:*
پچھلی آیت میں بنی اسرائیل کو عطاکردہ نعمتوں کویاد کرنے کاذکر تھااورعہد کو پوراکرنے کا حکم تھا اس آیت میں بنی اسرائیل کو ایمان لانے کی دعوت دی گئی ہے۔
*تفسیر* :
اللہ تعالیٰ نے اس آیت مبارکہ میں بنی اسرائیل کو دعوت دی ہے کہ وہ اپنے کیے گیے عہد کی پاسداری کرتے ہوئے ایمان لائیں،اس قرآن پاک کوقبول کریں۔
مُصَدِّقاً لِّمَا مَعَکُمْ ……اس قرآن پاک ایمان لانے کی وجہ یہ ہے کہ یہ قرآن اس تورات کی تصدیق کرنے والی ہے جو تمہارے پاس ہے۔اس آیت مبارکہ کے اس جملہ کا یہ مطلب ہے کہ قرآن پاک تورات کی ان تعلیمات کی تصدیق کرتاہے جوبرحق ہیں اور انہیں اللہ تعالیٰ نے حضرت موسیٰؑ پر اتاراتھا،ان باتوں کی ہرگز تصدیق نہیں کرتاجو یہود نے تحریف کے بعد خود شامل کی ہیں قرآنی اصطلاح میں تو وہ تورات کا حصہ ہی نہیں ہیں اور نہ ہی قرآن نے ان تحریفات کو کتاب کہا ہے۔
وَلاَ تَکُونُواْ أَوَّلَ کَافِرٍ بِہِ……آیت مبارکہ کے اس جملہ پر اگر ہم غور کریں تو ایک بات ذہن میں آتی ہے کہ اس قرآن پاک اور آپﷺ کی رسالت کے منکر تو پہلے مشرکین مکہ ہوچکے تھے تو پھر یہود کو کیوں کہا جارہاہے کہ تم اس کتاب کے پہلے منکر نہ بنو؟
تو اس کے جواب میں مفسرین فرماتے ہیں کہ مشرکین اگرچہ قرآن کے پہلے منکر تھے لیکن ان کا انکار جہالت کی وجہ سے تھا،وہ کتاب،وحی اورنبی سے بالکل ناواقف تھے جب کہ یہود تو اہل کتاب تھے وہ رسول اللہﷺ کو اچھی طرح جانتے تھے جیسا کہ اللہ نے فرمایاہے ……یعرفونہ کما یعرفون ابنائھم……وہ آپﷺ کو اپنے سگے بیٹوں سے بھی زیادہ اچھے طریقے سے پہنچانتے تھے،تو ان کو اول منکر کہنے کا مطلب یہ ہے کہ علم رکھنے والوں میں سے تم پہلے منکر نہ بنو،اہل کتاب میں سے تم اول منکر نہ بنو،ورنہ تمہارے بعد جتنے بھی لوگ منکر ہوں گے ان سب کا گناہ تمہارے سر ہوگا۔
اس آیت مبارکہ سے یہ معلوم ہوا کہ جو کسی نیکی کی ابتداء کرتا ہے آگے جتنے بھی لوگ اس نیکی کوکریں گے اس کا ثواب ابتداء کرنے والے کو برابر ملتا رہے گا،اسی طرح اگر کوئی گناہ کے کام کا افتتاح کرتا ہے تو اس ابتداء کرنے والے کو گناہ ملتا رہے گا۔ایک حدیث مبارکہ میں رسول اللہ ﷺ نے اس بات کو بیان فرمایاہے ” جس نے کسی نیکی کی ابتداء کی اس نیکی کو دوسرے لوگ کرتے رہے تو اسے بھی اجر دیا جائے گا اسی طرح کسی نے برائی کی ابتداء کی اسے اور لوگ بھی کرتے رہے تو اسے بھی گناہ ملے گا “
اس واضح فرمان کے بعد ہمیں ایک دفعہ اپنے اعمال پر نظر دوڑانی چاہیے کہ کہیں کوئی ہماری وجہ سے گناہ میں مبتلاء تو نہیں ہے،خاص طور پر ہمارا نوجوان طبقہ اس بات پر غور کرے جواپنے واٹس ایپ سٹیٹس پر گانے لگاتے ہیں اسی طرح اپنی فیسبک سٹوری پر گانے یا کوئی بے ہودہ چیز لگاتے ہیں اسی طرح کی جتنی بھی صورتیں ہیں ان میں سٹیٹس لگانے والے بھی گناہ میں برابر کے شریک ہیں۔لہذا ہمیں اس سے اجتناب کرنا چاہیے اورکوشش کرنی چاہیے کہ لوگ ہماری وجہ سے نیک اعمال کی طرف جائیں۔
وَلاَ تَشْتَرُواْ بآیَاتِیْ ثَمَناً قَلِیْلاً……اس میں اللہ تعالیٰ نے یہود کو اس بات سے منع کیا ہے کہ وہ دنیاوی نفع کی خاطرلوگوں کو تورات کا غلط مطلب نہ بتائیں،لوگوں کو غلط گائیڈ نہ کریں،اسی طرح یہ حکم ہمارے لئے بھی ہیں کہ ہم دنیاوی فائدے کی خاطر لوگوں کو غلط مسئلے نہ بتائیں،آج بہت سے لوگ بغیر تحقیق کے مسئلے بتاتے ہیں حالانکہ وہ کوئی عالم یامفتی بھی نہیں ہوتے تو ایسے لوگوں کو اجتناب کرنا چاہیے۔
وَإِیَّایَ فَاتَّقُونِ……اللہ تعالیٰ نے فرمایا ہے کہ ہماس دنیا میں اس کے احکامات کے مطابق زندگی گزاریں اگر کوئی رکاوٹ آتی ہے شیطان پھسلاکر گناہ کی طرف لے جائے تو اس ڈریں،اللہ کے خوف اور ڈر کی وجہ سے گناہوں کو چھوڑ دیں۔دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ ہمیں عمل کی توفیق عطافرمائے۔آمین

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے