Home / ساہیوال / ابلے ہوئے انڈے ؟

ابلے ہوئے انڈے ؟

تحریر ؤ انتخاب
محترمہ رابعہ الیاس
ساہیوال
ساہیوال سٹی کے بلکل ساتھ چک نمبر نوے (90) سکس آر میں ایک چار پانچ سال کی بچی جو گهر کے باہر گلی میں ایک ابلے ہوئے انڈے سیل کرنے والے کی آواز سن کر انڈے لینے کے لیئے گئی اور غائب ہوگئی اسکی ریپ شدہ ڈیڈ باڈی ساہیوال بائی پاس گنے کے کھیت سے ملی ہے.

بچی کی ڈیڈ باڈی جا بجا سگریٹ سے داغی ہوئی تھی معصوم زینب کے ریپ کے بعد اسکے قتل سے شروع ہونے والی بچے بچیوں کی قتل کی یہ خوفناک ،اذیت ناک ، انتہائی تکلیف ده قسط وار داستاں کا اب روز روز سننا اور کسی انسان نما درندے کے ہاتھوں ٹکڑوں میں کٹی پھٹی ادھڑی ہوئی معصوم بچوں کی ڈیڈ باڈیز کو نیوز میں دیکھنا اب ہر صاحب اولاد پاکستانی کے لیےناقابل برداشت ہو چکا ہے.

ایک بچی یا بچے کا اس طرح اذیت ناک موت کا شکار ہو کر مارے جانے کا دکھ والدین کے لیے کیا اہمیت رکھتا ہے یہ صرف ایک صاحب اولاد ہی سمجھ سکتا ہے میں سمجھتی ہوں کہ ان سب بچوں کے قاتل صرف وہی لوگ نہیں ہیں جو اس گھناؤنی حرکت کے مرتکب ہوتے ہیں بلکہ میرے نزدیک ان معصوم بچوں کا قاتل ہر وہ انسان ہے جو ان معصوم کلیوں کے قاتلوں کو سرعام پھانسی کی سزا دینے کی قدرت رکھنے کے باوجود سزا نہیں دے رہا.

خواہ وہ کوئی جج ہو کسی ادارے یا اس ملک کا سربراہ ہو میں حیران ہوں کہ قصور کی زینب کے قتل پر حکومت کو قصور وار ٹھہرانے والے اب اپنے دور حکومت میں ان گھناونے واقعیات پر کوئی ایکشن کیوں نہیں لے رہے.

جس تعداد میں معصوم بچیوں کوریپ کے بعد مارا جا رہا ہے اسے دیکھ کر مجھے لگ رہا ہے کہ مستقبل قریب میں پاکستان سے عورت ذات کی نسل ہی نا پید ہو جائے گی اور مردوں کوشادی کے لیے لڑکیاں کسی اور ملک سے درآمد کرنی پڑیں گی یہ ملک اسلام کے نام پر بنا تھا مگر افسوس پاکستان کے وجود میں آنے کے بہتر سالوں کے باوجود بھی اس ملک میں ابھی تک گوروں کا بنایا ہوا نظام اور قانون ہی نافذ ہے.

اس قانون میں لچک ہونے کے باعث مجرم جرم کرنے کے باوجود بھی کھلے عام دندناتے پھرتے ہیں مگر اب ہمیں اس پر سنجیدگی سے سوچنا بھی ہو گا اور اسلامی سزاؤں کے نفاز کے لیے کوشش بھی کرنی ہو گی اسلام میں جان کے بدلے جان ہے اور معصوم بچوں کے ساتھ ریپ کر کے ان کواذیت دے کر قتل کرنے سے بڑا جرم تو روئے زمین پر آج تک ایجاد ہی نہیں ہوا شاید.

جب تک اس جرم کے کرنے والے کو سر عام پھانسی نہیں دی جائے گی یہ جرم اب رکنے والا نہیں ہے آپ سب کے لیے بہتر ہے بلکہ فرض اولین ہے اس پر بھرپور احتجاج کریں.

اپنے معصوم بچے اور بچیوں کو گھروں میں چھپا لو ورنہ ایک دردناک اور اذیت ناک موت ان کی منتظر کھڑی ہے کیونکہ جب تک کسی بھی مظلوم بچی یا بچے کے قاتل کو سر عام پھانسی پر نہیں چڑھایا جائے گا یہ سلسلہ اب رکنے والا نظر نہیں آتا.

جب تک پاکستان کے ہر شہر ہر قصبے ہر گاؤں میں پیدا ہونے والی ہر بچی اس ظلم کا شکار ہو کر اس قوم کے خلاف فریاد لے کر
اللہ کی عدالت میں پہنچ نہیں جاتی اور قدرت جوش میں آ کر کوئی عذاب پوری قوم پر نازل نہ کر دے.

یاد رکھیں اگر ہم سب نے یک زبان ہو کر اس مسئلے پر آواز نہ اٹھائی اور حکومت سے بچوں کےقاتلوں کو سر عام پھانسی دینے کا مطالبہ نہ کیا تو تم سب ہی ایک دن اپنی اپنی بیٹیوں کی ڈیڈ باڈیز کے سرہانے بیٹھے سر پکڑ کر رو رہے ہو گے کیونکہ جو پڑوسی کے گهر لگی دیکھ کر صرف تماشا دیکھتا ہے اور آگ بجھانے میں اسکی مدد نہیں کرتا اگ جلد یا بدیر اس کے گهر بھی پہنچ ہی جاتی ہے اور اس کا اپنا گهر بھی جل جاتا ہے.

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

8 comments

  1. Avatar

    quick country online viagra properly dark carefully night generic
    viagra 100mg little media each hit generic viagra sales next device
    [url=http://viagenupi.com/#]online viagra[/url] else tour viagra pills across
    primary http://viagenupi.com/

  2. Avatar

    otherwise pattern generic viagra else corner near word online viagra
    strange public instead incident viagra originally text [url=http://viagenupi.com/#]generic viagra[/url] fresh egg generic viagra sales through suggestion http://viagenupi.com/

  3. Avatar

    ahead passage naltrexone hcl recently pain bimatoprost ophthalmic solution easily task careprost
    buy online aside signal [url=https://bimatoprostonline.confrancisyalgomas.com/#]careprost bimatoprost ophthalmic best price[/url] naturally patient buy naltrexone daily lie https://naltrexoneonline.confrancisyalgomas.com/

  4. Avatar

    again somewhere cenforce sample free truly inflation else brief cenforce 100 please strength suddenly skill cenforce 200 price next science [url=http://cavalrymenforromney.com/#]overnight cenforce delivery[/url]
    already application cenforce 200mg cheaper strongly draw http://cavalrymenforromney.com/

  5. Avatar

    super grand [url=http://www.cialisles.com/#]cialis
    20mg[/url] here force off site cialis 20 mg best price least economics cialis 20mg previously
    meal http://cialisles.com/

  6. Avatar

    I very like this blog. Everything is cleared.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے