Home / پاکستان / طرزِ گفتگو

طرزِ گفتگو

ہمارا طرزِ گفتگو اور ہمارے خدشات
(ایک سال پہلے کی تحریر)

✍از قلم
رشحاتِ ربانی/ نعیم اختر ربانی

تکلفانہ رشتے اور مجبوریوں کی بھینٹ چڑھا ہوا رکھ رکھاؤ ہماری تہذیب کو دیمک کی طرح چاٹ رہا ہے۔ گفتگو کرتے ہوئے مخاطب کی ناراضگی کا خطرہ ہمہ وقت دامن گیر رہتا ہے۔ جرم کی تعریف اور مجرموں کو قانونی دائرہ کار سے بغاوت کا مشورہ دینا ہمارے لہجوں کا صدیقِ خالص بن چکا ہے۔ اپنے اور پراٸے کی تمیز کا باب مقفل ہو چکا ہے۔

ناشاٸستہ گفتگو اور بے وقت کلام کا ہر وقت تانتا بندھا رہتا ہے۔ مافی الضمیر کے اظہار کے لیے خوشامدوں کا سہارا لیا جاتا ہے۔ صوفیانہ لباس مں چھپے ہوٸے انسان نما ناگن اپنے زہر کے حملے کے لیے ہردم تیار رہتے ہیں۔گفتار کی کوک سے گھناٶنے کردار کی بو آتی ہے۔

ان سب کالے اووصاف کی موجودگی کا احساس ہمارےدل میں کوٸی ہل چل پیدا نہیں کرتا۔ضمیر بھی کہیں پسِ پردہ بےاعنتاٸی کی کڑوی نیند سو رہا ہے۔گناہوں کا تصور ہمارے ایمانی جذبات سے الجھتا ہے اور نہ ہی فطری تقاضوں کی آواز سے ٹکرانے کی ہمت کرتا ہے۔

سوچیں بھی تو کس دھب سے، کون سی رمز یا کھنک ہمارے اعضا ٕ میں کپکپی پیدا کرے؟ ہمارے ایمان بھی ہماری طرح خرگوش کی میٹھی ننید سوٸے

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے