Home / اسلام / قبلہ کی درست سمت*

قبلہ کی درست سمت*

*درس قرآن نمبر 106*

*مدرس : محمد عثمان شجاع آبادی*

بسم اللہ الرحمن الرحیم

قَدْ نَرٰى تَقَلُّبَ وَجْهِكَ فِى السَّمَآءِ ۖ فَلَنُـوَلِّيَنَّكَ قِبْلَـةً تَـرْضَاهَا ۚ فَوَلِّ وَجْهَكَ شَطْرَ الْمَسْجِدِ الْحَرَامِ ۚ وَحَيْثُ مَا كُنْتُـمْ فَوَلُّوْا وُجُوْهَكُمْ شَطْرَهٝ ۗ وَاِنَّ الَّـذِيْنَ اُوْتُوا الْكِتَابَ لَيَعْلَمُوْنَ اَنَّهُ الْحَقُّ مِنْ رَّبِّهِـمْ ۗ وَمَا اللّـٰهُ بِغَافِلٍ عَمَّا يَعْمَلُوْنَ (144)

*ترجمہ*

بے شک ہم آپ کے منہ کا آسمان کی طرف پھرنا دیکھ رہے ہیں، سو ہم آپ کو اس قبلہ کی طرف پھیر دیں گے جسے آپ پسند کرتے ہیں، پس اب اپنا منہ مسجد حرام کی طرف پھیر لیجیئے، اور جہاں کہیں تم ہوا کرو اپنے مونہوں کو اسی کی طرف پھیر لیا کرو، اور بے شک وہ لوگ جنہیں کتاب دی گئی ہے یقیناً جانتے ہیں کہ وہی حق ہے ان کے رب کی طرف سے، اور اللہ اس سے بے خبر نہیں جو وہ کر رہے ہیں۔

*ربط*

پہلے امت محمدیہ کو امت وسط کا خطاب دیا گیا۔اب انہیں بیت اللہ کو قبلہ بنانے کا حکم دیا جارہا ہے۔

*تفسیر*

اس آیت مبارکہ میں سب سے پہلے آپ ﷺ کے اشتیاق کو بیان کیا گیا ہے کہ آپ ﷺ کی یہ چاہت تھی کہ قبلہ بیت اللہ کو بنا دیا جاۓ۔یہ چاہت اس وجہ سے تھی کہ اسلام ملت ابراہیمی کے مطابق تھا اور آپ ﷺ یہ بھی جانتے تھے کہ بنی اسراٸیل کی امامت کازمانہ اب گزر گیا ہے اب امت محمدیہ کی امامت کا زمانہ ہے لہذا اب قبلہ بیت اللہ کو بنانا چاہیے لہذا آپ بار بار اپنا رخ انور آسمان کی طرف اٹھاتے اس انتظار میں کہ ابھی جبراٸیل تبدیلی قبلہ کا حکم لے کر آٸیں گے۔

دوسرے نمبر پر یہ حکم دیا گیا کہ اب اپنے رخ مسجد حرام کی طرف کر لو اس حکم کے لیے بڑے جامع لفظ ارشاد فرماۓ۔۔۔۔۔فَوَلِّ وَجْهَكَ شَطْرَ الْمَسْجِدِ الْحَرَامِ۔۔۔۔۔اور قبلہ کی سمت کو ذکر کرتے ہوۓ لفظ ” شطر “ ذکر فرمایا جس سے مقصد وسعت و آسانی دینا ہے کہ یہ حکم نہیں ہے کہ بعینہ قبلہ کی طرف رخ کیا جاۓ یہ حکم تو صرف ان کے لیے جن کے سامنے بیت اللہ موجود ہے اور جو دور دراز علاقوں میں رہنے والے ہیں ان کے لیے قبلہ کی سمت کی طرف رخ کر لینا کافی ہوگا۔
مفتی محمد شفیعؒ لکھتے ہیں کہ سمت قبلہ معلوم کرنے کے لیے جدید آلات کا اعتبار نہیں ہے۔اور جولوگ ان آلات کی مدد سے قبلہ معلوم کرنے بعد معمولی اختلاف پر نماز نہ ہونے کا فتوی لگاتے ہیں یہ کسی طرح درست نہیں ہے۔شریعت میں وسعت اور آسانی ہے اوراہل مشرق کے لیے 48 ڈگری تک مغرب کی سمت قبلہ ہے۔
اس مسٸلہ میں مزید تحقیق کے لیے اہل ذوق حضرت کے رسالہ
” سمت قبلہ “ کی طرف رجوع فرماٸیں۔

ہمیں اپنا قبلہ درست کرنے کے ساتھ ساتھ اپنے نظریات و اعمال کا قبلہ بھی درست کرنا چاہیے۔اپنی زندگی کے ہر لمحہ کو اسلامی تعلیمات کی روشنی میں گزاریں۔

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے