Home / کالم / حسین تیرے بعد ظالموں کا ڈر نہیں رہا

حسین تیرے بعد ظالموں کا ڈر نہیں رہا

تحریر:
فلک زاہد

حسین تم نہیں رہے تمھارا گھر نہیں رہا
مگر تمھارے بعد ظالموں کا ڈر نہیں رہا

محرم کا آغاز ہوتے ہی ہر طرف ماتم و جلوس اور آہ و فغاں کی آوازیں بلند ہونے لگتی ہیں…عزادار کالے لباس زیب تن کیے اپنا سینہ پیٹتے “یا حسین” پکارتے جلوس کی شکل میں رواں دواں ہوتے ہیں انکو دیکھ کر دل میں جہاں دہشت سوار ہوتی ہے کیونکہ میں فرقے کی رو سے شیعہ نہیں ہوں مگر سنی ہونے کے ناطے دل پر عجیب کرب و ملال طاری ہونے لگتا ہے جس سے آنکھوں کے گوشے بار بار نم ہونے لگتے ہیں…
میرے مولا اے میرے حسین علیہ السلام انکو دیکھ کر میرے دل میں شدید اذیت و تکلیف اٹھتی ہے. انکو دیکھ کر میں وہ غم وہ حزن وہ بے بسی وہ لاچاری محسوس کرنے کی کوشش کرتی ہوں جو آپ پر کربلا کے میدان میں بیتی تھی..اے میرے مولا حسین میں عام سی بندی بشر ہوں آپ کی اس تکلیف کا اندازہ کرنے کی سکت نہیں رکھتی آپکی اس اذیت کو نہیں پہنچ سکتی مگر اے میرے مولا حسین میرا دل برابر خون کے آنسو روتا ہے یذیدی فوج کی بربریت ، ظلم اور بے حسی پر.
میرے مولا میں وہاں آپکے ساتھ میدان کارزار میں نہ تھی مگر میرا احساس آپکے ساتھ ہے اپنے تصوارت میں, میں وہاں اپنے آپ کو آپ کے ساتھ دیکھتی ہوں.وہ یزیدی فوج کی لشکر کشی, وہ انکا اہلِ بیت اطہار کے خیموں کا محاصرہ کر لینا, وہ انکے گھوڑوں کے ٹاپوں کی آواز سب کچھ اپنے تصور کی آنکھ سے دیکھ رہی ہوں.
جب جب میں کربلا کے صحرائی میدان پر آگ اگلتے سورج کو اپنے سر پر محسوس کرتی ہوں مجھے اپنا آپ پیسنے میں شرابور نظر آتا ہے وہ سورج کی حدت وہ صحرا کی تپش میرا بدن جھلسائے دیتی ہے اور میرا دل یہاں تڑپنے لگتا ہے ماتم کناں ہو جاتا ہے.وہ ننھے اصغر اور نئے نویلے دلہا قاسم علیہ السلام کا خون میں لت پت تڑپتا لاشہ میرا کلیجہ حلق میں لے آتی ہیں اور میں بے اختیار نم آنکھوں سے اپنی انگلیاں دانتوں تلے داب لیتی ہوں.
میرے مولا جونہی نویں اور دسویں محرم کا آغاز ہوتا ہے میں روزے سے ہوجاتی ہوں تاکہ صحرا میں تین دن سے آپکی شدت کی پیاس کا اندازہ کر سکوں وہ احساس مجھے پانی پینے سے روک دیتا ہے اے میرے مولا اے میرے جنتیوں کے سردار میرے حلق سے پانی کا قطرہ کیسے اتر سکتا یے جب آپکا حلق خشک اور پیاسا ہے.میں کیسے پانی پی سکتی ہوں جب میرے مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کا پاک گھرانہ پیاسا ہے اور میرے مرشد غازی عباس اس پانی کے لیے اپنے بازو گنوا بیٹھے ہیں مجھے تو دریا فرات کی غیرت اور روانی پر حیرت و تعجب ہوتا یے کہ وہ کیونکر چل کر آپ کے پاس نہ آگیا اگر اس وقت نہ آ سکا تو کیونکر بعد میں اب تک بہہ رہا یے ڈوب کر مر کیوں نہ گیا..
میرے مولا آپ سے عشق کی انتہا یہ ہے کہ جب گھر گھر سے نوحوں کی آواز سنائی دیتی ہے میرا ہاتھ یکبارگی اپنے سینے کی طرف حرکت کرنے لگتا ہے اور دل چاہتا ہے میں بھی ماتم کناں ہوجاؤں. گلی گلی نکلتے جلوسوں کو دیکھ کر میرا بھی دل کرتا یے میں سر پر آپکے نام کی دستار باندھ کر ہاتھ میں غازی عباس علیہ السلام کا علم تھام کر ان حسینیوں کے لشکر میں شامل ہوجاؤں اور لبیک یا حسین کا نعرہ لگاتی چلتی جاؤں چلتی جاؤں اتنا چلوں کے پیروں پر زخم پڑ جائیں مگر پھر بھی نہ رکوں میرے قدم صرف اس صورت رک سکیں جس وقت آپکا روضہ مبارک نظروں کے سامنے ہو آنکھیں آنسوؤں سے ڈبڈبا رہی ہوں اور لبوں پر صرف آپکے نام کا ورد جاری و ساری ہو..مولا آپکی شہادت کا غم ایسا غم ہے جو تاقیامت رہے گا.
مولا آپکے قدموں میں آنا زندگی کی خواہشوں میں سے ایک خواہش ہے آپ کے چاہنے والوں میں میرا بھی شمار ہوتا ہے اپنی اس بندی پر کرم فرما دیں مولا اسے اپنے قدموں کی خاک دیکھنا نصیب کر دیں اور زندگی آپکی اور خانوادہ رسول ص کی محبت میں فنا ہوجائے .
میرے مولا آپ سے محبت کا تقاضا یہی ہے کہ میں آپ کے راستے جو انصاف, محبت, امن, جدوجہد اور انسانیت کے راستہ ہیں انہیں اپناؤں. میں فرقہ واریت میں پڑنے کی بجائے اپنے حسین کو یاد کروں جو سب کے ہیں اور جس نے حق کی خاطر سر جھکایا نہیں بلکہ کٹا دیا تاکہ آنے والی نسلیں روشنی و ہدایت کا راستہ پا سکیں. حسین ع نے نانا کے دین پر چل کر جب دکھا دیا تو آج میں جب ان کی نام لیوا ہوں تو مجھے معلوم ہے ان سے محبت کا فرض یہ ہے کہ میں شریعت سے تجاوز مت کروں.جیسے حسین ع نے حق کا علم تھاما تھا میں بھی ان کے راستے ان کی راہ گزر کے نشان تلاش کروں تاکہ میں دین اسلام کی حدود پر عمل پیرا ہو سکوں. یہ سچا سبق ہے اور یہ میرے حسین ع کا سبق ہے جو ازلی بھی ہے ابدی بھی .

About Babar

Babar
I am Babar Alyas and I’m passionate about urdu news and articles with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind The Qalamdan with a vision to broaden my city’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Chak 111/7R , Kamalia Road, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Ph: +923016913244 Email: babarcci@gmail.com https://web.facebook.com/qalamdan.net https://www.twitter.com/qalamdanurdu

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے